Pehli bar Shahrukh khan ne Dr zakir naik ka dil khush krdia | Waja jan kar aap bhi


0
Pehli bar Shahrukh khan ne Dr zakir naik ka dil khush krdia | Waja jan kar aap bhi



An Indian film actor shahrukh khan gives a statement about jihad that it’s actual meaning is to resist the evil inside you, but unfortunately many people misuse this word.
Dr Zakir naik had also some points regarding this and clarified that its means to strive against evil, to strive while making the society better and also strive in the battle field also in the way of Allah.

#deenspeeches #drzakirnaik #zakirnaik
Thanks for watching.

source


Like it? Share with your friends!

0

What's Your Reaction?

hate hate
0
hate
confused confused
0
confused
fail fail
0
fail
fun fun
0
fun
geeky geeky
0
geeky
love love
0
love
lol lol
0
lol
omg omg
0
omg
win win
0
win
Deen Speeches

Deen Speeches

3 Comments

Your email address will not be published.

  1. محمد صلی اللہ علیہ وسلم نے اپنی وفات کے بعد خدا سے ملاقات کے بعد ایک سوال کیا!
    اے اللہ تو اس دنیا کے تمام جانداروں کا خالق ہے، ہمیں اس میں کوئی شک نہیں، میں یہ بھی جانتا ہوں کہ تو انسانوں کو تمام اعمال کا پھل دینے والا ہے۔
    لیکن ہم آپ کو صرف بے شکل شکل میں دیکھ سکتے ہیں
    پھر کیوں تیری پوجا کرتے ہیں کچھ لوگ پتھر میں، پیرے میں، مورتی میں،
    کیا اس پتھر میں پیر میں رہتے ہو، مورتی میں بھی؟
    تب خدا نے جواب دیا۔
    اے محمد یہ جاننے کے لیے لکڑیاں جمع کر کے جلا دو۔
    محمد نے جھیلوں کو جمع کر کے جلا دیا۔
    پھر خدا نے کہا،
    اب بتاؤ اے محمد وہ پتھر جو اس آگ کے نور کی وسعت سے باہر ہیں اور آگ کی روشنی پاؤں تک پہنچ رہی ہے
    پھر محمد نے کہا
    جی ہاں،
    تو خدا نے جواب دیا، ہم اس دیوار میں بھی ہیں اور پتھر میں بھی!

    تو آپ کا سائز ہے!
    پھر خدا نے کہا ہاں
    پھر محمد صلی اللہ علیہ وسلم نے خدا کی شکل دیکھی!

    اور پھر خدا نے کہا،
    ہم کسی کی پہچان کے محتاج نہیں اور نہ ہی عزت کی تمنا رکھتے ہیں نہ کسی انسان کی توہین ہو سکتی ہے
    ہم اپنی مرضی سے جسم کو ترک کر کے جسم کو اپنی مرضی سے اپناتے ہیں۔
    دنیا میں جو کچھ ہوتا ہے میری مرضی سے ہوتا ہے۔
    انسان دنیا میں تین طرح کے اعمال کرتا ہے، ہم ان تین اعمال کا نتیجہ دیتے ہیں، چوتھا عمل ہر گز نہیں، جس کا پھل انسان اپنی مرضی سے حاصل کرے۔
    (1) ایمان کہلاتا ہے (2) سوچ کو (3) جسمانی کہتے ہیں۔

    کتھک جملہ: مشری کی مشری۔

    "مشری بہاری" کسی کا اوتار ہے (مشری، مشرا کے گھر سے، بہاری بہار میں پیدا ہوا ہے)
    یہ کورونا وبا مشری کی مرضی سے پیدا ہوئی ہے!

    اگر آپ ان کے پچھلے جنم کی حقیقت جاننا چاہتے ہیں تو متھرا کے ورنداون میں کسی بھی مورتی پوجا کرنے والے سے جان سکتے ہیں!بہاری جی بہار کے کسی بھی مذہب سے ہو سکتے ہیں!